کلر سیداں کے نواحی علاقہ میں واقع ایک ڈیم میں نامعلوم افراد نے زہریلا مادہ پھینک دیا جس سے سات ہزار سے زائد کی پالتو مچھلیاں ہلاک ہو گئی ہیں

Pinterest LinkedIn Tumblr +

کلر سیداں (نامہ نگار) کلر سیداں کے نواحی علاقہ میں واقع ایک ڈیم میں نامعلوم افراد نے زہریلا مادہ پھینک دیا جس سے سات ہزار سے زائد کی پالتو مچھلیاں ہلاک ہو گئی ہیں۔بلدیہ کلر سیداں کے کونسلر سیٹھ ضابرحسین نے بتایا کہ انہوں نے ڈھوک صابری مک میں مچھلیوں کی افزائش کیلئے ایک عدد ڈیم تعمیر کر رکھا ہے جس میں سات ہزار سے زائد مچھلیاں موجود تھیں جنہیں گزشتہ روز بعض نامعلوم افراد نے اس میں زہریلا مادہ پھینک کر تمام مچھلیوں کو مار دیا ہے۔انہوں نے بتایا کہ سات ہزار سے زائد مچھلیاں اس وقت مردہ حالت میں پانی میں تیر رہی ہیں جس سے ڈیم کا پانی زہر آلود ہو چکا ہے اور خدشہ ہے کہ پانی پینے کی صورت میں مقامی آبادیوں کے جانور بھی جاں بحق ہو سکتے ہیں۔کونسلر کے مطابق ڈیم کے قریب ایک عددتوڑا جس میں محکمہ ویٹرنری کی چیچڑ مار ادویات جو کہ زائد المعیاد تھیں پڑی ہوئی ملی ہیں جبکہ چند یوم قبل 3/4 افراد جن کیساتھ دو خواتین کو بھی تھیں کو ڈیم پر ڈینگی سپرے کرتے بھی دیکھا گیا اور مقامی افراد نے انہیں ایسا کرنے سے منع بھی کیا تھا۔کونسلر ضابرنے ویٹرنری کی ادویات تھانہ کلر سیداں پولیس کے حوالے کر دی ہیں اور نامعلوم افراد کیخلاف کارروائی کیلئے درخواست بھی دے دی ہے۔اے ایس آئی نبیل بیگ مصروف تفتیش ہیں۔

Share.

Comments are closed.