دفتر ڈائریکٹرجنرل منگلا ڈیم ہاوسنگ اتھارٹی میرپور آزاد کشمیر نے پچھلے مہینے متاثرین منگلا ڈیم کیلئے بنائے گئے سمال ٹاونز میں دوکانوں کو کرائیں پر دئیے

Pinterest LinkedIn Tumblr +

ڈڈیال۔(بیورورپورٹ)

دفتر ڈائریکٹرجنرل منگلا ڈیم ہاوسنگ اتھارٹی میرپور آزاد کشمیر نے پچھلے مہینے متاثرین منگلا ڈیم کیلئے بنائے گئے سمال ٹاونز میں دوکانوں کو کرائیں پر دئیے جانے کیلئے اشتہار جاری کیا جس میں دوکان کا کرایہ دو ہزار اور سیکیورٹی کی رقم پچاس ہزار رکھی جو کہ متاثرین منگلاء ڈیم کیساتھ بہت بڑی نا انصافی اور سراسر زیادتی ہے نیوٹاون سیاکھ میں کمرشل مارکیٹ دو کروڑ بارہ  لاکھ اٹھتیس ہزار نو سو بیالیس (2,12,38942)کی خطیر رقم خرچ  کیےجانے کے باوجودکمرشل مارکیٹ آج بھی نامکمل اور کھنڈرات میں تبدیل ہے اشتہار میں جو کرایہ مقرر کیا گیا وہ سیاکھ نیوٹاون کے نزدیک ترین جتنے بھی بازار ہیں اُن سے بہت زیادہ ہے جبکہ کہ نامکمل کمرشل مارکیٹ کی سیکیورٹی فیس پچاس ہزاربھی مُقرر کی گئی ہے جو بہت زیادہ ہے اہلیان نیو ٹاون سیاکھ نے ڈائریکٹر جنرل منگلا ڈیم سے مطالبہ کیا ہے کہ کمرشل مارکیٹ کی صفائی کی جائیں اور ساتھ نامکمل اور کھنڈر عمارتوں کو فوری مکمل کرکے مُناسب کرایہ پہ عوام کو دوکانات دی جائیں تا کہ اہلیان نیوٹاون سیاکھ کو شاپنگ کیلئے دور دراز علاقوں میں نہ جانا پڑے جبکہ منگلا ڈیم ہاوسنگ اتھارٹی محکمہ نے دوکانوں اور نامکمل کھنڈر نماء بلڈنگز  کو ٹھیک کرنے کے بجائیں الٹا لُٹنے کے چکر میں ہے اور کھنڈرات میں تبدیل کمرشل مارکیٹ کا کرایہ دو ہزار اور سیکیورٹی فیس پچاس ہزار مانگ رہا ہے جو کہ مُتاثرین منگلا ڈیم کیساتھ بہت بڑی نا انصافی ہے متاثرین منگلاء ڈیم اہلیان نیوٹاون سیاکھ نے ڈائریکٹر جنرل منگلا ڈیم سے فوری مطالبہ کیا ہے کہ نیو ٹاون  سیاکھ کی مارکیٹ کو دیکھ کر کرایہ مقرر کیا جائیں اور شاپنگ سینٹر مکمل کرکے سیکیورٹی فیس کم کریں دوکانیں ضرورت مند آفراد کو دی جائیں جو اپنا کاروبار جاری رکھ سکیں۔۔۔۔

Share.

Comments are closed.