تنظیم اہل سنت انٹرنیشنل کے زیر اہتمام تاجدار ختم نبوت کانفرنس کا انعقاد

0

کہوٹہ (راجہ ساجدجنجوعہ ) تنظیم اہل سنت انٹرنیشنل کے زیر اہتمام جامعہ رضویہ انوار العلوم واہ کینٹ میں تاجدار ختم نبوت کانفرنس کا انعقاد، کانفرنس میں پیر غلام نظام الدین جامی ،پیر سید حسین الدین شاہ سمیت سینکڑوں علماء و مشائخ اور ہزاروں افراد نے شرکت کی ،اس موقع پر مفکر ملت علامہ پیر عبدالقادر نے ختم نبوت کانفرنس کا اعلامیہ پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ تاجدار ختم نبوت کا یہ نمائندہ اجتماع اتحاد عالم اسلامی اور عالمگیر غلبہ اسلام کی بھر پور جدوجہد کرنے اور قیام پاکستان کے بنیادی مقاصد یعنی نظام مصطفی کے نفاذ اور مقام مصطفی کے تقدس کے تحفظ کے لئے مسلسل جدوجہد کرنے کے عزم کا اظہار کرنا ہے ۔وطن عزیز وطن عزیز پاکستان اولیاء کرام کے فیضان اور علماء و مشائخ اہلسنت کی بھرپور جدوجہد کا نتیجہ ہے ۔تحریک قیام پاکستان ،تحریک ختم نبوت اور تحریک نظام مصطفی کی طرح علماء و مشائخ وطن عزیز کی نظریاتی اور جغرافیائی سرحدوں کے تحفظ کیلئے کیس قربانی سے دریغ نہیں کریں گے ،تاجدار ختم نبوت کانفرنس حکومت وقت سے مطالبہ کرتی ہے کہ ملک میں مکمل نظام مصطفی کا نفاذ اور شریعت اسلامیہ کو سپریم لاء بنانے کیلئے آئین میں فی الفورترمیم کی جائے۔ ایسے حالات میں جب عالم کفر اسلام کیخلاف ریشہ دوانیوں ،سازشوں اور دہشت گردی کے مصروف ہیں ،کشمیر ،فلسطین، عراق ،افغانستان ،شام ،مصر ،برما اور دیگر ممالک میں مسلمانوں پر مظالم یک پہاڑ ڈھائے جارہے ہیں ،تاجدار ختم نبوت کانفرنس تحریک کشمیر سمیت دنیا بھر میں مظلوم مسلمانوں کی جدوجہد کے ساتھ مکمل یک جہتی کا اظہار کرتی ہے اور پاکستان اور مسلم ممالک کی قیادتوں پر زور دیتی ہے کہ وہاں سازشوں ،مظالم اور ریشہ دوانیوں کیخلاف مشترکہ لائحہ عمل تیار کریں،کشمیری مسلمانوں کی جدوجہد آزادی جو اسلام کے ساتھ وابستگی الحاق پاکستان اور تکمیل پاکستان کی جدوجہد کی مکمل حمایت کی جائے اور بھارت سے کشمیر کو دلوانے کیلئے اسلامی دنیا کو بیدار کیا جائے اور قوام متحدہ کی قرار دادوں کے مطابق کشمیریوں کو حق خود ارادیت دلایا جائے،تاجدار ختم نبوت کانفرنس کا یہ نمائندہ اجتماع ملک میں فرقہ واریت ،دہشت گردی پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے ملک کو درپیش خارجی خطرات اور چیلنجوں کا مقابلہ کرنے کیلئے داخلی امن و اتحاد اور یکجہتی کی ضرورت پر زور دیتا ہے ،موجودہ حکومت مہنگائی ،بے روزگاری ،بدامنی ،جرائم ،ظلم و کرپشن ،فحاشی اور عریانی کی روک تھام کے لئے موثر اقدامات کرے اور الیکٹرانک میڈیا اور ذرائع ابلاغ میں مغربی تہذیب و ثقافت کے پرچار کی بجائے اسلامی نظریات اور تہذیب کو فروغ دیا جائے اور مسلمانوں کے مشاہیر کے کارناموں کو اجگر کرکے نئی نسل کو اپنے شاندار اور قابل فخر ماضی سے وابستہ کیا جائے ۔تاجدار ختم نبوت کا نفرنس کا یہ اجتماع موجودہ حکومت کی طرف سے ختم نبوت کے حوالے سے آئین میں موجود شقوں کے تغیر و تبدل کی پرزور مذمت کرتا ہے اور راجہ محمد ظفرالحق کی سربراہی میں قائم ہونے والی کمیٹی کی رپورٹ فوری طور پر منظر عام پر لانے کا بھر پور مطالبہ کرتا ہے تاکہ ذمہ داروں کا جلد از جلدتعین ہوسکے اور آئندہ کیلئے یہ اجتماع متنبہ کرتا ہے کہ اس قسم کی کسی بھی تبدیلی سے گریز کیا جائے ،یہ ملک و قوم کیلئے سخت نقصان دہ ہے۔ آج کی یہ عظیم کانفرنس اس بات پر بھی زور دیتی ہے کہ تمام قادیانیوں کو کلیدی عہدوں سے فی الفور برطرف کیا جائے کیونکہ پاکستان مخالف سرگرمیوں میں ملوث یہ پاکستان کے ازلی دشمن ہیں۔تاجدار ختم نبوت کانفرنس کا یہ نمائندہ اجتماع امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے پاکستان مخالف بیانات کی شدید الفاظ میں مذمت کرتا ہے اس سلسلے میں پاکستان کی مسلح افواج اور حکومت پاکستان جو قدم اٹھائے گی اس کی مکمل حمایت کرتا ہے۔کانفرنس تمام تعلیمی اداروں میں فرقہ واریت کو فروغ دینے والے سربراہ پر پابندی کا مطالبہ کرتی ہے ۔تعلیمی اداروں میں جدید تعلیم کے ساتھ ساتھ اسلامی تعلیم کو بھی ضروری قرار دیا جائے تاکہ تعلیم سے فارغ ہونے والے طلباء صرف ملازم نہیں بلکہ صحیح مسلمان بن سکیں ،اتحاد امت کیلئے مجاہد ملت مولانا عبدالستار خان نیازی کے چار نکاتی فارمولے پر عمل کیا جائے ۔ختم نبوت کانفرنس میں پیر غلام نظام الدین جامی آف گولڑہ شریف ۔پیر سید حسین الدین شاہ ،پیر جابر علی شاہ آف بھنگالی شریف ،پیر سید ساجدسلطان ،پیر سید شاہ محمد کمال کاظمی ،پیرڈاکٹر عمر فراز محمدی سیفی ،علامہ سید محبوب حسین شاہ کاظمی ،علامہ مفتی محمد حنیف قریشی ،علامہ سید امتیاز حسین شاہ کاظمی ،علامہ غلام محمد چشتی ،علامہ ادریس ہاشمی ،علامہ عبدالمجید قادری نقشبندی ،علامہ شاہد محمود عباسی ،علامہ سید عارف حسین گیلانی ، علامہ سردار محمد آصف القادری ،علامہ پیر محمود حسین قادری چشتی ،علامہ مفتی محمد عبدالسلام قادری ،علامہ سید رضا المصطفیٰ بخاری ،علامہ آصف محمود قادری ،علامہ برکات احمد چشتی ،علامہ مفتی طاہر سہیل قادری ،محمد سلیم خان ایڈووکیٹ اور علامہ سید ضمیر حسین شاہ کاظمی نے شرکت کی ۔ ختم نبوت کانفرنس کے کامیاب انعقادمیں پیر محمود احمد عباسی ،صاحبزادہ عثمان علی عباسی اور صاحبزادہ منیر عالم ہزاروی نے کلیدی کردار ادا کیا۔اس موقع پر پیر محمود احمد عباسی نے ختم نبوت کانفرنس میں شرکت کرنے پر پیر غلام نظام الدین جامی آف گولڑہ شریف ،پیر سید حسین الدین شاہ سمیت سینکڑوں علماء و مشائخ اور کانفرنس میں شرکت کرنے والے ہزاروں افرادکا شکریہ ادا کرتے ہوئے انہیں ختم نبوت کانفرنس کے کامیاب انعقاد پر مبارک باد دی۔

Share.

Comments are closed.