پاک چین اقتصادی راہداری میں گلگت بلتستان کو نظر انداز کیا گیا تو بھرپور احتجاج کیا جائے گا-ولایت بلتی

0

Immagineاسلام آباد (راجہ ارشد محمود    پوٹھوار لنک ڈاٹ کام) پاک چین اقتصادی راہداری میں گلگت بلتستان کو نظر انداز کیا گیا تو بھرپور احتجاج کیا جائے گا وفاقی حکومت ڈرائی پورٹ کو سوست سے حویلیاں منتقل کر رہی ہے، ایسے اقدامات گلگت بلتستان کے عوام کے حقوق پر ڈاکہ ڈالنے کے مترادف ہوں گے گلگت بلتستان کے عوام محب وطن پاکستانی ہیں، ان کے ایسا سلوک وطن عزیز کے حق میں نہیں ہے آئینی صوبہ ہو یا ایوان بالا یا ایوان زیریں میں نمائندگی ہو، وفاق میں بیٹھے ہوئے کچھ نام نہاد لوگ رکاوٹ کھڑی کر رہے ہیں وزیراعظم اور آرمی چیف گلگت بلتستان کے عوام کے حقوق کے حوالے سے مثبت کردار ادا کریں۔ ان خیالات کا اظہار گلگت بلتستان ہیومن رائٹس کے صدر ولایت بلتی نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان کے ہر قسمی وسائل سے وفاقی فائدہ اُٹھاتا چلا آرہا ہے جبکہ گلگت بلتستان کے عوام کو ہمیشہ نظر انداز کیا گیا، جب بھی آئینی حقوق کی بات ہوتی ہے یا علاقہ کے حوالے سے کوئی بھی فیصلہ ہونا ہو، گلگت بلتستان کے عوام سے رائے نہیں لی جاتی اس قسم کے اقدامات نامناسب ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ پاک چائنہ اقتصادی راہداری سے گلگت بلتستان کے عوام کو سب سے زیادہ فائدہ پہنچنا چاہیے کیونکہ یہ علاقے کے عوام کا حق ہے۔ تاہم باخبر ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ علاقے کے عوام کو اقتصادی راہداری سے فائدہ پہنچتا نظر نہیں آرہا۔ انہوں نے وزیراعظم اور آرمی چیف سے اپیل کی ہے کہ گلگت بلتستان کے عوام کو قومی اسمبلی، سینٹ میں نمائندگی کے ساتھ ساتھ آئینی صوبہ بنایا جائے تاکہ عوام کو ان کا آئینی حق مل سکے

Share.

Comments are closed.

error: